Articles

سیاست کے دو مختلف انداز

سیاست کے دو مختلف انداز

کل جب لاہور ایک بار پھر سیاسی سر گرمیوں کا مرکز بنا ہوا تھا تو سوچا کہ کچھ خبریں ہی دیکھ لیتا ہو جیسے ہی ٹی وی آن کیا تو نیوز چینل پر آدھی آدھی سکرین پر دونوں جماعتوں کے جلسوں کا منظر نامہ دیکھایا جا رہا تھا چند منٹ کے بعد اشتہارات شروع ہو گئے اور اشتہارات دیکھ کر مجھے لگا کہ شائد ملک میں عام انتخابات شروع ہو گئے ہیں کیونکہ عام انتخاب کی طرع پھر سے ایک بار مسلم لیگ ن کی اشتہاری مہم کا آغاز ہو چکا تھا اور موضوع تھا سیاست کے دو مختلف انداز ایک دوسرے کے آمنے سامنے جس میں دونوں جماعتوں کے رہنماؤں کی تصویریں دیکھائی جا رہی تھی پہلے لاہور کے حلقہ سے ہی شروع کر لیتے ہیں ایک طرف ایاز صادق جو کہ دو سال سے زیادہ عرصے تک دھاندلی سے جیت کر عوام کے پیسے پر آیا شی کرتا […]

سپہ سالار اعظم راحیل شریف زندہ باد آخر کیوں

سپہ سالار اعظم راحیل شریف زندہ باد آخر کیوں

  گیارہ ستمبر 1948 ء و ہ المناک دن ہے جب بابا ئے قوم قائداعظم محمد علی جنا ح دارفانی سے کوچ کر گئے قائداعظم کی علالت کارازاُس وقت آشکارہوا جب محمد علی جناح تکمیل پاکستان کی جنگ جیت گئے اور موذی مرض کے ہاتھوں ایک سال بعد جان کی بازی ہارگئے اس موت وحیات کی کشمکش میں قائداعظم نے کانوں کانوں بھی کسی کو خبر نہ ہونے دی کہ وہ ٹی بی کے کے مریض ہیں اور پوری تندہی کیساتھ پاک سرزمین کے قیام کیلئے جدو جہد کرتے رہے جدوجہد قائداعظم ؒ کی شخصیت کے بارے ہی جواہر لا ل نہرو نے کہا تھا جناح کو کبھی خریدا نہیں کاسکتا بات ہے تشکیل پاکستا ن کے اوائل عمری کی نو منتخب اور نوخیز کابینہ کا اجلاس جاری تھا قائد کے پرسنل سیکرٹر ی نے پو چھا کہ سر چائے سرو کی جائے یا کافی قائدکی آنکھیں سرخ ہو گئیں […]

بنام اکبری منڈی

بنام اکبری منڈی

  کچھ دنوں سے جو واقعات پیش آ رہے ہیں ان کو دیکھ کہ اقبال کا ایک شعر یا د آ گیا شاعر مشرق لکھتا ہے کہ قوم اپنی جو زر و مال جہاں پر مرتی بت فروشی کے عوض بت شکنی کیو ں کرتی پچھلے کچھ دن سے میڈیا کے کچھ لوگوں کا کردار دیکھ کر بڑا افسوس ہوا لاہور کا ضمنی الیکشن شروع ہو نے سے پہلے ارشد شریف نے ایک پروگرام کیا جس میں عمران خان اور تحریک انصاف پر الزام لگا یا گیا کہ ان کو پیسہ یہودیوں اور پتا نہیں کہا ں کہاں سے آتا ہے میں اس وضاحت میں نہیں جاتا کہ تحریک انصا ف بیرون ملک سے پیسہ کیسے اور کہا ں سے اکٹھا کرتی ہے کیو نکہ بات یہ نہیں ہے میرا مسئلہ یہ ہے کہ آپ نے عمران خان کو یہودیوں اور مغربی غیر مسلم طاقتوں کا ایجنٹ قرار دے دیا […]

عصمتو ں کی نیلامی بنام اسلامی جمہوریہ پاکستان

عصمتو ں کی نیلامی بنام اسلامی جمہوریہ پاکستان

  چند دن پہلے 12 اکتوبر کا دن گزرا ایک وہ 12 اکتوبر 1999 ء کا دن بھی تھا جب پاکستان کے جمہوری وزیر اعظم میاں محمد نوازشریف کی حکومت کو گھر بھیج دیا اور اُس وقت کے آرمی چیف نے ملک کی بھاگ دوڑ سنبھال لی جس کے بعد میاں نوازشریف اور اُنکی فیملی کی اصل کہانی شروع ہوئی سابق وزیر اعظم کو پابند سلاسل کر دیا گیا ایک جیل سے دوسر ی جیل منتقل کئے جانے کا عمل شروع ہوا میاں صاحب کو ایک جیل سے دوسر ی جیل کے حوالے کرنے کیلئے جیل سپرنٹنڈنٹ کے سامنے پیش کیا گیا سپرنٹنڈنٹ نے روایتی انداز میں سابق وزیراعظم سے نام پو چھا میاں صاحب نے کہا میاں محمد نوازشریف اس کے بعد اُس آفیسر نے دوسری بعد نہایت تحمکانہ لہجے میں والد کا نا م پو چھا میاں صاحب نے کہا میاں محمدشریف سپرنٹنڈنٹ نے اس کے بعد جو […]

چائے پانی

چائے پانی

  پچھلے کچھ عرصہ سے لند ن میں رہ رہا ہو لیکن آج میرے ساتھ ایک ایسا وا قع پیش آیا کہ میرا سر شرم سے جھک گیا یہ کہانی ایک یورپین لڑکی کی ہے جو کچھ دن پہلے پاکستان گئی وہاں اس نے اسلام قبول کیا اور سمندری کے ایک گاوٗں سے تعلق رکھنے والے لڑکے سے شادی کی اور پھر بیس دن کے بعد وہ لندن واپس آگئی وہ میرے گھر کے قریب رہتی ہے تو آج رستے میں میری ملاقات ہو گئی اب یہ میری بد قسمتی کہہ لے یا پھر کچھ اور کہہ میں نے اس سے پوچھ لیا وہ پاکستان گئی تھی تو اسکو کیسا لگا اس نے بڑی خوشی سے بتایا کہ وہاں کے لوگ بہت اچھے تھے سب نے اسکا بہت خیال رکھاگاوٗں کے سب لوگ اسکی بڑی عزت کرتے تھے مجھے یہ سب سن کے بہت خوشی ہوئی لیکن میری یہ خوشی […]

جمہوریت کی مضبوطی

جمہوریت کی مضبوطی

  آج کل پاکستان کے حالات ایسے ہیں کہ لگتا ہے کہ فوج نے مارشل لاہ کا ایک نیا طریقہ اپنایا ہے جس میں بظاہر تو گورنمنٹ جمہوری ہے لیکن پالیسی بنانے اور فیصلہ کرنے کی طاقت فوج کے پاس ہے جس کی ذمہ دار ہماری سیاسی جماعتیں ہیں کیونکہ پاکستان میں کبھی کسی سیاسی جماعت نے اپنے کارکنوں کو جمہوری سوچ سے تیار ہی نہی کیا کارکنوں کو صرف جلسے جلوس اور نعرے بازی تک ہی محدود رکھا کبھی انکو پتا ہی نہیں چلنے دیا کہ اصل میں جمہوریت کس بلاں کا نام ہے انکو کبھی بتایا ہی نہی گیا کہ عوام کے حقوق کیا ہیں اور حکمرانوں کی ذمہ داری کیا ہے ہمارے ارکان اسمبلی سڑکیں اور نالیاں بنانے میں لگے ہوئے ہیں کیونکہ انکی وجہ سے انھوں نے عوام سے ووٹ لینے ہیں حالانکہ یہ انکا کام بالکل نہی ہے اگر ہمیں جمہوریت کو مضبوط کرنا ہے […]

موجودہ صورتحال

موجودہ صورتحال

  ہر بار لکھنے سے پہلے سوچتا ہو ں کہ اس بار کچھ اچھا لکھوں گا جس میں کو ئی ہنسی خو شی کی بات ہوکسی مثبت پہلوکو اجاگر کرنے کی کوشش کی جائے لیکن بندہ کرے بھی تو کیا کرےجب آپ کے چہرے پر اداسی ،آنکھو ں میں نمی ،ذہن میں پریشانی اور دل میں درد بھرا ہو تو پھر نہ تو آپ کے چہرے پر مسکراہٹ نظر آتی ہے اور نہ ہی آنکھو ں میں خوشی کی چمک ایسے میں آپ کو وجودہ صورتحال کے بارے میں ہی لکھنا پڑتا ہت اور پھر ہم پر ہمارے حکمرانوں کی کچھ خاص کر م نوازی ہے کہ معاملات بھی اتنے الجھے ہو ئے ہیں کہ آپ کو روزانہ د یکھنا پڑتا ہے کہ کس موضوع پر لکھا جائے ایک طرف تو لوگ سیلاب سے تباہ و برباد ہو رہے ہیں تو دوسری طرف ہمارے سیاستدان اپنی سیاست چمکا رہے ہیں […]

advertise