چوہدری آرٹس سوسائٹی اینڈ کلچرل ونگ کے زیر اہتمام رد الفساد کانفرنس کا انعقاد

Facebooktwittergoogle_pluslinkedinrssyoutubeinstagramby feather

‎کمالیہ نئی آواز (بیوروچیف۔ ڈاکٹر غلام مرتضیٰ ) ۔

چوہدری آرٹس سوسائٹی اینڈ کلچرل ونگ کے زیر اہتمام رد الفساد کانفرنس کا انعقاد نواب باربی کیواینڈ ریسٹورنٹ چیچہ وطنی روڈ کمالیہ میں کیا گیا۔

IMG_5558 کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی رئیس بلدیہ محمد شریف ملک نے کہا کہ آپریشن رد الفساد سے دہشت گردی کا قلع قمع بہت جلد ہو جائے گا۔ تاہم غیر مشروط طور پر آپریشن رد الفساد کی بھر پور طریقہ سے حمایت اور تائید کرتے ہیں۔ کیونکہ دہشت گردی کے خاتمہ کے لئے آپریشن رد الفساد انتہائی ضروری ہو گیا تھا۔ اس لئے دہشت گردی کے خاتمہ کے لئے ہم پاکستان کی پاک فوج اور عسکری اداروں کی مکمل حمایت کرتے ہیں۔ اور پنجاب میں رینجرز کی تعیناتی اور اس کے آپریشن کو خوش آمدید کہتے ہیں۔ کیونکہ دہشت گردوں کے مکروح عزائم کے خاتمہ کے لئے یہ آپریشن نا گزیر ہوگیا تھا۔ اس کے علاوہ حکومت کا سی پیک منصوبہ ملکی تقدیر بدل دے گا۔ اور روزگار کے بہترین مواقع پیدا ہو ں گے۔ ہر گزرتے دن کے ساتھ حکومت لوڈ شیڈنگ بے روزگاری ، دہشت گردی اور بیجا در اندازی پر قابو پانے کے لئے شب و روز کوشاں ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سوسائٹی کے ایم ڈی ایم افضل چوہدری نے کہا کہ دہشت گرد شیطان کے پیرو کار اور حیوانیت کے علم بردار ہیں۔ دہشت گرد اپنے سفلی جذبات اور یزیدی افکار کو زبردستی مسلط کرنے کے لئے معصوم اور بے گناہ پاکستانیوں کا نا حق خون بہا رہے ہیں۔ یہ سفلی قاتل بے گناہ انسانوں کا خون بہانے والے انسان نہیں۔ بلکہ حقیقت میں انسانی روپ میں شیطان ہیں۔ اسلام تو قتل نا حق کا سب سے بڑا مخالف ہے۔ اور اسلام ہی ایک ایسا مذہب ہے کہ جس کے افکار کے مطابق ایک بے گناہ انسان کے قتل کو پوری انسانیت کے قتل کے مترادف قرار دیا ہے۔ سوسائٹی کے پرنسپل ایڈوائزر ظہیر عباس چوہدری نے اپنے بیان میں کہا کہ وطن عزیز میں یہ خون کی ہولی کھیلنے والے یہ درندے کسی بھی رعایت کے قابل نہیں ہیں۔ یہ انسانیت کے قاتل اور انسان کہلانے کے بھی حقدار نہیں ہیں۔ تاہم رد الفسا د دہشت گردی خوف و ہراس کے خاتمہ کے لئے کلیدی کردار کا حامل ہو گا۔ ان سفلی درندوں کا کوئی دین اور مذہب نہیں ہوتا۔ انسانیت کے قاتل ان سہولت کاروں کے خلاف بھی تادیبی کاروائی ناگزیر ہے۔ دہشت گردوں کی ان ظالمانہ کاروائیوں کے باوجود دہشت گردی کی یہ بزدلانہ کاروائیاں عوا م کے حوصلے پست نہیں کر سکتیں۔ حکومت نے نیشنل ایکشن پلان کے توسط سے ان پر کافی حد تک قابو پا لیا ہے۔ PSLکے فائنل کا لاہور میں انعقاد دہشت گردی کے مُنہّ پر ایک تمانچہ ہے۔ اجلاس میں ڈاکٹر غلام مرتضیٰ ، محمد نعیم خان، کالو سیال و دیگر افراد اور سوسائٹی کے اراکین نے کثیرتعداد میں شرکت کی۔

739 total views, 1 views today

share

Share to Google Plus
Share to MyWorld
[Total: 0    Average: 0/5]

Leave a Reply

Your email address will not be published.

advertise