Articles

‎بین الاقوامی شہرت یافتہ شاعر سیۤد ظفر عباس ظفرؔ۔۔ تحریر سیۤد سلمان اکبر رضوی

‎بین الاقوامی شہرت یافتہ شاعر سیۤد ظفر عباس ظفرؔ۔۔ تحریر سیۤد سلمان اکبر رضوی

بین الاقوامی شہرت اور عزت کے حامل شاعر ظفر عباس ظفرؔ یکم جون 1965ء میں پاکستان کے صوبے سندھ کے شہر خیرپور میرس میں پیدا ہوئے۔ ان کا تعلق خیرپور کے ایک مہذب گھرانے سے ہے۔ اِن کے آباو اجداد جونپور انڈیا سے ہجرت کرکے خیرپور کی مذہبی دھرتی پر تشریف لائے۔ ابتدائی تعلیم خیرپور سے ہی حاصل کی اور پھر کراچی یونیورسٹی سے بی اے کا امتحان پاس کیا۔
اسکول ہی کے زمانے سے شاعری کا آغاز کیا اور اسکول ہی سے قومی ترانے اور نغمے گا کر انعامات حاصل کئیے۔ ظفر عباس ظفرؔ نے ہزاروں کی تعداد میں حمد، نعت، منقبّت، سلام، نوحے، مسدّس، قومی نظمیں، شخصی نظمیں، مرثیے، غزلیں، سہرے، رخصتی، قطعات اور متفرق اشعار تحریر کیئے۔ ظفر عباس ظفرؔ کی گیارہ کتابیں منظرِ عام پر آکر پڑھنے والوں سے داد و تحسین وصول کرچکی ہیں۔ تین کتابوں پر انہیں اعزازات سے بھی نوازا گیا ہے۔ اِن کی […]

موٹاپا اور گردوں کے امراض! تحریر:اختر سردار چودھری ،کسووال

موٹاپا اور گردوں کے امراض! تحریر:اختر سردار چودھری ،کسووال

گردوں کے امراض کے عالمی دن 9 مارچ 2017ء کے موقع پر گردوں کے فیل ہونے کی و جوہا ت ،علامات ،علاج اورپرہیز کے بارے ایک معلوماتی خصوصی تحریر
موٹاپا اور گردوں کے امراض!
صحت مند گردوں کے لئے مثبت طر ززندگی اپنائیں !
انٹرنیشنل سوسائٹی آف نیفرالوجی اور نیشنل فیڈریشن آف کڈنی فاؤنڈیشن نے 2006 ء میں گردوں کا عالمی دن منانے کی ابتدا ء کی تھی، دنیا میں 126 ممالک میں یہ دن مارچ کی دوسری جمعرات کو منایا جاتا ہے ۔اور ہر سال ایک نئے تھیم کے ساتھ منایا جاتا ہے ،امسال اس کا تھیم ہے ،گردوں کے امراض اور موٹاپا،صحت مند گردوں کے لئے مثبت طر ززندگی اپنائیں ۔یعنی موٹاپے پر کنٹرول کرنے کا پروگرام بنایا گیا ہے۔اس سال 2017 ء کویہ دن 9 مارچ کو منایا جا رہا ہے ۔اس دن کے حوالے سے سرکاری اور غیر سرکاری سطح پر طبی تنظیمیں، ہسپتالوں میں گردوں کی بیماریوں کے […]

دہشت گردی کے خاتمے کے لئے آپریشن ’’رد الفساد‘ ‘ تحریر:اختر سردار چودھری،کسووال

دہشت گردی کے خاتمے کے لئے آپریشن ’’رد الفساد‘ ‘ تحریر:اختر سردار چودھری،کسووال

ارض پاک میں گزشتہ ایک ہفتے سے جاری دہشت گردی کی کاروائیوں میں سو سے زائدافراد کی شہادتوں کے بعد منگل کو پاک فوج نے ایک اعلی سطح کے اجلاس میں دہشت گردوں اور انتہا پسندوں کے خلاف آپریشن ’’رد الفساد‘ ‘ کے نام سے ملک بھر شروع کرنے کا اعلان کردیا ہے۔جبکہ پنجاب میں رینجرز کو بھی تعینات کر دیا گیا ہے۔
آپریشن ’’رد الفساد‘ ‘ کا اعلان اس وقت ہوا ہے جب ملک میں ضربِ عضب کے نام سے پہلے ہی ایک آپریشن جاری ہے۔ملک کے قبائلی علاقے شمالی وزیرستان میں جون 2014 میں شروع کیے جانے والے فوجی آپریشن ضربِ عضب کا دائرہ دسمبر 2014 میں پشاور کے آرمی پبلک سکول پر طالبان کے حملے کے بعد ملک کے دیگر علاقوں تک پھیلانے کا اعلان کیا گیا تھا۔ پاک فوج کے ترجمان کی جانب سے جاری کیے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ آپریشن ’رد الفساد‘ کا […]

جسٹس سجاد علی شاہ….اپنی عدالت سے آخری عدالت تک

جسٹس سجاد علی شاہ….اپنی عدالت سے آخری عدالت تک

چیف جسٹس سجاد علی شاہ کے ساتھ ایک عہد دفن ہوا۔ ان کے دور میں سپریم کورٹ پر نون لیگ نے حملہ کیا۔ سجاد علی شاہ کے دور میں شاہراہ دستور پر سپریم کورٹ کی یکہ وتنہا بلڈنگ میں ایک ہی وقت میں دو چیف جسٹس بیٹھے۔ دونوں نے ایک دوسرے کے خلاف فیصلے دیے اور دونوں نے ایک دوسرے کے فیصلوں کو مسترد کر ڈالا۔ 1973 ء کے دستور کے مطابق آئینی عدالت کے کسی جج کو ہٹانے کے لیے صرف ایک ہی راستہ ہے۔ وہ ہے آئین کے آرٹیکل 209 کے تحت سپریم جوڈیشل کونسل کا فیصلہ ۔ چیف جسٹس سجاد علی شاہ کو ان کے ہمراہی ججوں نے ایک طرح کے ریفرنڈم کے ذریعے چیف جسٹس کے عہدے سے ہٹا دیا۔ ریفرنڈم کے بارے میں آپ جانتے ہی ہیں، حبیب جالب نے یوں کہہ رکھا ہے: ؎
کچھ باریش سے چہرے تھے
سچائی کا ماتم تھا
جِنّ تھا یا ریفرنڈم […]

دنیا میں خود کش حملوں کی تاریخ  ۔۔۔ تحریر رانا ساجد سہیل

دنیا میں خود کش حملوں کی تاریخ ۔۔۔ تحریر رانا ساجد سہیل

دنیا میں پہلا خود کش حملہ13 مارچ 1881 میں  روسی  سلطنت میں ونٹر پیلس کے باہر  ہوا جب  اگنیٹی گرینوسکی نامی شخص نے  الیگزینڈر دوئم کے قافلے  پر بم پھینکا  لیکن اسکی گاڑی بلٹ پروف تھی جو اسے نیپولیئن نے تحفے میں دی تھی جسکی وجہ سے وہ محفوظ رہا جب الیگزینڈر باہر آیا گرینوسکی نے دیکھا تو وہ تیزی سے اسکی طرف بھاگا اور اسکے قدموں میں بم پھینکا  جس سے وہ دونوں موقع پر ہلاک ہو گئے، گرینوسکی بائیں بازوں کی د  ہشتگرد تنظیم کا نوجوان رکن تھا ایک رات پہلے اس نے لکھا کہ
 میں ہماری فتح کے  شاندار دور میں ایک دن یا ایک گھنٹہ بھی زندہ نہیں رہوں گا لیکن مجھے یقین ہے کہ میں اپنی موت کیساتھ اپنی ذمہ داری پوری کر دو گا جو مجھے کرنی چاہئے۔
اس عمل سے گرینوسکی تاریخ میں  دنیا کا  پہلا  ریکارڈ شدہ  خود کش حملہ آور تصور کیا جاتا […]

شاہ صاحب ،حقیقت اور افسا نہ : عارف نظامی

شاہ صاحب ،حقیقت اور افسا نہ : عارف نظامی

اکستان کے 13ویں چیف جسٹس سید سجا د علی شاہ بھی دنیا سے رخصت ہو گئے۔بد قسمتی سے عدلیہ کی آ زادی کے لیے بہت اچھے کام کر نے کے با وجو د وہ میاںنواز شر یف کے دوسرے دور وزارت عظمیٰ میں ان سے محاذآ را ئی کی بنا پر متنازعہ ہو گئے ۔میاںنواز شر یف نے اس حوالے سے صرف یہ عزت کما ئی کہ ان کی آشیرباد سے سپر یم کو رٹ پرحملہ کیا گیا اور بالا ٓخروہ سپریم کو رٹ میں دراڑیں ڈا ل کر سجا د علی شاہ کو تنہا کر کے عضو معطل بنانے میں کامیاب ہو گئے ۔دلچسپ بات یہ ہے کہ سندھی جج جسٹس سجا د علی شاہ کو چیف جسٹس بنانے کا کر یڈٹ محتر مہ بے نظیر بھٹو کو جا تا ہے، شاہ صاحب جسٹس افتخا ر محمد چو ہدری کی طر ح اپنی ہٹ کے پکے تھے ۔محتر مہ […]

آوے کا آوا ن: ہارون الرشید

آوے کا آوا ن: ہارون الرشید

 قبالؔ نے کہا تھا ؎
تھا جو ناخوب بتدریج وہی خوب ہوا
کہ غلامی میں بدل جاتا ہے، قوموں کا ضمیر
آزادی کے بعد ہماری ذہنی غلامی اور بے حسی کیا اور بھی بڑھ نہیں گئی ؟ 
خبر آئی کہ گاڑی ایک ڈیڑھ گھنٹہ کی تاخیر سے روانہ ہو گی۔ کچھ دیر میں خبر ملی کہ پنوّں عاقل ابھی پہنچی ہے چھ بجے رحیم یار خان میں آمد اس کی متوقع ہے۔ پھر نوع بہ نوع اطلاعات۔ تاخیر ہی کی‘ کبھی کم کبھی زیادہ۔
ادھر کچھ دن سے ریل پہ سفر کا آغاز کیا تھا۔ اگرچہ کم ہی پڑھ پاتا ہوں‘ مگر کینیڈا سے تعلق رکھنے والے ایرک مارگلوس میرے پسندیدہ اخبار نویس ہیں۔ غیر متعصب‘ معتدل مزاج‘ ہنرمند اور دانا۔ ایک بار انہوں نے کہا تھا : ہوائی جہاز اڑتا ہوا جیل خانہ ہے۔ کار سے سفر کرنے میں آزادی کا احساس زیادہ ہوتا ہے مگر یہ تھکا دینے والا ہے۔ سڑک کے ساتھ […]

کرکٹ، سیاست اور غلاظت : مجیب الرحمان شامی

کرکٹ، سیاست اور غلاظت : مجیب الرحمان شامی

پی ایس ایل کا فائنل لاہور میں ہوا، اور اس شان سے ہوا کہ بد خبریاں اور بدشگونیاں بانٹنے والے اپنا سا مُنہ لے کر رہ گئے۔ کھسیانی بلی تو کھمبا نوچ لیتی ہے، لیکن کھیسانے بلّوں، بلکہ باگڑ بلّوں کے ہاتھ تو کوئی کھمبا بھی نہیں آ رہا تھا کہ وہ اس ہی پر غصہ نکال لیں۔ نتیجتاً انہوں نے اپنے آپ ہی کو نوچ لیا… ”چاند‘‘ نکلا تو ہم نے وحشت میں… جس کو دیکھا اسی کو ”نوچ‘‘ لیا۔

اِس سے قطع نظر کہ کس نے کیا کِیا اور کیا کہا، کس کو کیا کہنا چاہئے تھا، اور کیا نہیں کہنا چاہئے تھا، کیا کر گزرنا چاہئے تھا، اور کیا کرنے کا سوچنا بھی نہیں چاہئے تھا، بنیادی اور بڑی حقیقت یہی ہے کہ پاکستانی قوم نے اپنے آپ کو منوا لیا۔ قذافی سٹیڈیم میں پشاور اور کوئٹہ کی ٹیموں کے درمیان جو میچ کھیلا جا رہا تھا (اور […]

آنے والا سونامی : خورشید ندیم

آنے والا سونامی : خورشید ندیم

بلاگرز کا قصہ ایک منفرد واقعہ نہیں۔ یہ آنے والے دور کی ایک دھندلی سی تصویر ہے۔کچھ وہ بھی ہیں جن پر اِس کی سحر بے حجاب ہے۔

سوشل میڈیا ابلاغ کی ایک نئی دنیا ہے۔ یہ ایک نیا چیلنج بھی ہے۔ یہ تہذیبی کشمکش کا نیا میدان ہے۔ فکر و نظرکی وہ بحث جو اس سے پہلے ابلاغ کے دوسرے ذرائع تک محدود تھی، اب یہاں منتقل ہو رہی ہے۔ اس فورم کا ایک پہلو یہ بھی ہے کہ اپنی شناخت کو مستور رکھتے ہوئے، وہ کچھ کہا جا سکتا ہے جو شناخت کے ساتھ کہنا مشکل ہے۔ ہر ایجاد دو دھاری تلوار ہے۔ یہ اگر اناڑیوں کے ہاتھ لگ جائے تو خیر پر شر غالب آ جا تا ہے۔ سوشل میڈیا کا معاملہ بھی کچھ ایسا ہی ہو گیا ہے۔اگر یہ انسانوں کے استعمال میں رہتا تو فکر و نظر کا اختلاف شاید فساد میں تبدیل نہ ہوتا۔ بدقسمتی […]

یوپی معرکہ سر کرنے کے بعد مودی کی پالیسی کیا ہو گی

یوپی معرکہ سر کرنے کے بعد مودی کی پالیسی کیا ہو گی

بھارت ہمارا ہمسایہ تو ہے مگر ازلی دشمن بھی مانا جاتا ہے۔اس کی حکمران اشرافیہ کو دو قومی نظریے کی بنیاد پر پاکستان کا قیام آج تک ہضم نہیں ہوا ہے۔ ہماری سلامتی اور بقاءکو زک پہنچانے کا لہذا کوئی موقع وہ ہاتھ سے جانے نہیں دیتی۔
اسی بھارت کا مگر ایک بہت بڑا صوبہ ہے۔یوپی جس کا نام ہے۔کسی زمانے میں ”متحدہ صوبہ جات اودھ“ کہلاتا تھا،ان دنوں ”اترپردیش“ کا مخفف ہے۔ ا ٓبادی اس کی 22کروڑ تک پہنچ چکی ہے۔ برصغیر کے مسلمانوں میں اپنے لئے ایک جدا وطن حاصل کرنے کی خواہش1905میں تقسیم بنگال سے جڑے سیاسی قضیوں سے قبل،اسی خطے میں ”ہندی-اُردو تنازعہ“ کی وجہ سے ٹھوس صورتوں میں دُنیا کے سامنے آئی تھی۔
سرسید احمد خان نے اس خواہش کو علمی اور ثقافتی بنیادیں فراہم کرنے کے لئے علی گڑھ کو اپنا مرکز بنایا تھا۔اسی صوبے کے سہارن پور کا ایک جھوٹاسا قصبہ دیوبند بھی ہے جہاں […]

advertise